Saturday, June 22, 2024
Homesliderاس سال 10 لاکھ عازمین فریضہ حج ادا کریں گے

اس سال 10 لاکھ عازمین فریضہ حج ادا کریں گے

- Advertisement -
- Advertisement -

جدہ ۔ ہرملک کےلیے مختص کوٹے کے مطابق اورسعودی وزارت صحت کی سفارشات پر عمل کرتے ہوئے اس سال دنیا بھر سے 10 لاکھ مسلمان فریضہ حج ادا کریں گے۔2021 میں مملکت کے 60,000 ویکسین  لینے والے شہریوں اور مقامی افراد  تک حج کو محدود کیا گیا تھا تاکہ کورونا کے پھیلاؤ پر قابو پایا جا سکے اور حجاج کرام اور دیگر افراد کی حفاظت کو یقینی بنایا جا سکےلیکن، سعودی عرب کی جانب سے وبائی امراض کے دوران حج اور عمرہ کے موسموں کے لیے احتیاطی تدابیر کے کامیاب نفاذ کے بعد عازمین کی گنجائش 10 لاکھ تک بڑھا دی گئی ہے۔

اس سال کا حج 65 سال اور اس سے کم عمر کے لوگوں کے لیے ہے جن کو کوویڈ  ویکسینیشن پروگرام کو مکمل کرنے کی ضرورت کی تعمیل کرنی ہوگی۔وزارت حج و عمرہ نے ٹویٹ کیا کہ مملکت سے باہر کے عازمین کو سعودی عرب روانگی کے 72 گھنٹوں کے اندر پی سی آر ٹسٹ کا منفی نتیجہ جمع کروانا ہوگا۔

اس میں کہا گیا ہے کہ سعودی عرب میں عازمین حج کے لیے درکار شاٹس میں ان لوگوں کے لیے گردن توڑ بخار کے لیے ایک ٹیکہ شامل ہیں جنہیں پچھلے پانچ سالوں میں ویکسین نہیں لگائی گئی تھی۔ انہیں فلو کی ویکسین بھی لگوانی پڑتی ہے۔ مقامی عازمین حج پر جانے سے کم از کم 10 دن پہلے یہ ویکسین ضرور لگائیں۔

اعدادوشمار کی جنرل اتھارٹی کے اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ 2020 میں وبائی مرض کے عروج کے دوران حجاج کی تعداد گھٹ کر صرف 1,000 رہ گئی تھی ۔ عازمین حج کی تعدادکومحدود کرنے کا فیصلہ خطرے کی تشخیص اور صحت عامہ اور حفاظت کے خدشات پر مبنی تھا۔سال 2019 میں حج پر تقریباً 2.5 ملین عازمین تھے، اور 1.9 ملین بیرون ملک سے تھے۔گزشتہ دہائی میں مقامی اورغیرملکی عازمین کی سب سے زیادہ تعداد 2012 میں تھی جب تقریباً 3.2 ملین افراد نے سالانہ حج ادا کیا۔ 2016 میں سب سے کم 1.9 ملین تھی۔