Saturday, June 22, 2024
Homesliderتمل ناڈو میں 18 سال سے زیادہ عمر کے طلبہ کےلئے ٹیکہ...

تمل ناڈو میں 18 سال سے زیادہ عمر کے طلبہ کےلئے ٹیکہ لازمی

- Advertisement -
- Advertisement -

چینائی۔ تمل ناڈو کے محکمہ صحت نے 18 سال سے زیادہ عمر کے طلباء کے لیے کالج کی کلاسوں میں شرکت کے لیے کووڈ ٹیکہ لگانے  کو لازمی قرار دیا ہے،۔وزیر صحت ما سبرامنیم نے جمعہ کو نئے احکامات کا اعلان کیا ہے ۔ یہاں ماہرین تعلیم کے ایک اعلیٰ سطحی اجلاس میں شرکت کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سیکرٹری ہائر ایجوکیشن تمام تعلیمی اداروں کومکتوب لکھیں گے جس میں انہیں ہدایت دی جائے گی کہ وہ 18 سال سے زائد عمر کے طلباء کے لیے کم از کم ایک خوراک کورونا ٹیکہ کی دوا لینا لازمی قرار دیں۔

 ان کو دی گئی ویکسین انہوں نے کہا کہ 18 سال سے زیادہ عمر کے انجینئرنگ کے طلباء میں سے صرف 46 فیصد نے ویکسین کی پہلی خوراک لی ہے اور صرف 12 فیصد طلباء نے ویکسین کی دونوں خوراکیں لی ہیں۔ سبرامنیم نے کہا کہ کالج کے منتظمین کو چاہیے کہ وہ طلبہ کی فہرست کی تصدیق کریں اور اس بات کو یقینی بنائیں کہ صد فیصد دوہری خوراکیں دی گئی ہیں۔ کالج کینٹینوں اور تعلیمی اداروں کے کھانے کےلئے استعمال ہونے والے مقامات  میں انفیکشن پھیلنے کے زیادہ امکانات اور خطرے کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔

وزیر نے یہ بھی کہا کہ محکمہ صحت کی پیشگی اجازت کے بغیر طلباء کے اجتماعات اور تقاریب کا انعقاد نہیں کیا جانا چاہئے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ طلباء کو ڈسپوزایبل کنٹینرز میں کھانا لانا چاہیے اور بیچ میں کینٹینوں میں بھیجا جانا چاہیے۔یادر ہے  کہ اومی کرون کے  مختلف قسم کے وائرس کے  کئی ممالک میں مسائل پیدا کرنے کے ساتھ، ہندوستانی مرکز ی  حکومت کے علاوہ تمام ریاستی حکومتوں کو ہدایت دی ہے کہ وہ ٹیکہ اندازی مہم پر توجہ دیں اور اس بات  کویقینی بنائیں کہ تمام طلباء کی صد فیصد ٹیکہ اندازی ہوئی ہو۔