Thursday, May 30, 2024
Homesliderریلوے سکیورٹی ایپ تیار، چلتی گاڑی میں ہونے والے جرائم کا سدباب...

ریلوے سکیورٹی ایپ تیار، چلتی گاڑی میں ہونے والے جرائم کا سدباب ممکن

- Advertisement -
- Advertisement -

حیدرآباد ۔ ہندوستانی ریلوے کا ایک مشترکہ ریل سکیورٹی موبائل ایپ تیار ہوچکا ہے جس سے گاڑیوں میں ہونے والے جرائم کی چلتی گاڑی میں رپورٹ درج کرنا اور اس پر فوری طور پر قابو پانا ممکن ہو جائے گا۔ آر پی ایف کے ڈائریکٹر جنرل ارون کمار نے یہاں ایک ورچوئل پریس کانفرنس میں بتایا کہ گورنمنٹ ریلوے پولیس (جی آر پی) اور ریلوے پروٹیکشن فورس (آر پی ایف) کا یہ مشترکہ ایپ تیار ہوگیا ہے ۔ کوویڈ وبا کی وجہ سے اسے متعارف نہیں کیا جاسکا تھا لیکن اب جلد ہی اسے متعارف کیا جائے گا ۔

انہوں نے کہا کہ کامن ریلوے سکیورٹی ایپ میں موقع اورواردات پر متاثرین کے بیان اور رپورٹ کو آن لائن درج کرنے ، ساتھی مسافروں کے بیان درج کرنے کی سہولت موجود ہوگئی ، جس کی بنیاد پرسکیورٹی فورسز اپنی ضروری کارروائی شروع کرسکتی ہیں ۔ مسافررپورٹ درج ہونے کے بعد آرام سے گھر بھی جا سکے گا اور وہ ایپ پر اپنی رپورٹ پر کارروائی کی نگرانی بھی کرسکتا ہے ۔ کمار نے کہا کہ ایپ کو کوئی بھی مسافراپنے موبائل پر ڈاؤن لوڈکرسکتا ہے ۔گاڑیوں میں چلنے والے ریلوے ملازمین اورآرپی ایف اور جی آر پی کے عہدیداروں کے پاس بھی یہ موبائل ایپ ہو گا ۔

 ٹرینوں میں خواتین مسافروں کی حفاظت کے لئے کیے جانے والے اقدامات کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کوویڈ کے دور میں تقریباََ6000 خواتین کانسٹیبلوں کو بھرتی کیا ، جس سے آر پی ایف میں خواتین عہدیداروں کا تناسب نو فیصد ہو گیا ہے ۔ کسی بھی مرکزی پولیس فورس میں یہ خواتین کی سب سے زیادہ تعداد ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس سے آر پی ایف کے میری سہیلی منصوبے کو تقویت ملی ہے ، جس میں اکیلی سفرکرنے والی خواتین مسافروں کے ریزرویشن چارٹ سے شناخت کرکے ٹرین میں تعینات خواتین کانسٹیبل ان سے سیٹ پرجاکررابطہ کرتی ہے اوراپنا نمبر دے کر انہیں سکیورٹی کی یقین دہانی کرواتی ہیں ۔ کمارنے کہا کہ آر پی ایف نے ریلوے احاطے میں سکیورٹی کو بہتربنانے کے لئے وسیع منصوبے بنائے ہیں۔ اب تک 6094 اسٹیشنوں پر سی سی ٹی وی کیمرے لگائے جاچکے ہیں اور وہ پوری ڈیجیٹل نگرانی کے دائر میں آگئے ہیں۔ سی سی ٹی وی کیمروں کی مسلسل نگرانی کے لئے ڈویژنل سطح پر کنٹرول روم قائم کرنے کا منصوبہ ہے ۔