Wednesday, May 22, 2024
Homesliderفاطمہ ثناء شیخ بھی  مرگی سے پریشان 

فاطمہ ثناء شیخ بھی  مرگی سے پریشان 

- Advertisement -
- Advertisement -

ممبئی۔ بالی ووڈ اداکارہ فاطمہ ثناء شیخ جو جلد ہی سام بہادر میں اندرا گاندھی کے کردار میں نظر آئیں گی، انہوں نے حال ہی میں اپنے سوشل میڈیا پر مرگی کے بارے میں بیداری پیدا کرنے کے لیے کہا وہ بھی اس مرض  میں  مبتلا ہیں۔نومبر کو مرگی سے آگاہی کا مہینہ کہا جاتا ہے۔ فاطمہ ثناء شیخ لوگوں میں اس سے نمٹنے اور اس کے بارے میں بیداری پیدا کرنے کی مسلسل کوشش کررہی ہیں۔ اداکارہ نے اس وجہ سے خطاب کیا جب اس نے اپنے سوشل میڈیا پر لوگوں کے لیے اپنی کہانیاں، جدوجہد اور چیلنجز کا اشتراک کرنے کے لیے ایک گفتگو کا آغازکیا۔

اپنے انسٹاگرام کے اسٹوری سیکشن میں انہوں  نے ایک سوال لکھا یہ مرگی کا مہینہ ہے۔ اپنی کہانی، جدوجہد، چیلنجز شیئر کریں یا صرف پوچھیں۔انہوں  نے اپنی صحت کی حالت کے بارے میں بھی کھل کر بتایا کہ یہ دنگل کی تیاریوں کے دوران ہی انہیں  اس عارضے کے بارے میں معلوم ہوا۔ان کے ایک پیروکار کی جانب سے یہ پوچھے جانے پر کہ انہیں اس کے بارے میں کب پتہ چلا ؟  اداکارہ نے کہا: (مجھے) اس وقت تشخیص ہوا جب میں دنگل کے لیے ٹریننگ کررہی تھی۔ میں نے ایک ایپی سوڈ حاصل کیا اور سیدھی اسپتال پہنچی… میں پہلے (پانچ سال تک) انکار کرتی رہی   لیکن  اور اب میں نے اسے اپنانا، کام کرنا اور اس کے آس پاس رہنا سیکھ لیا ہے۔

اس حالت کے ساتھ وہ کیسے کام کررہی ہیں، فاطمہ نے کہا کہ وہ اپنے تمام ڈائریکٹرز کو مطلع کرتی ہیں کہ انہیں مرگی کا مرض ہے۔وہ ہمیشہ سے بہت معاون اورسمجھدار رہے ہیں۔ وہ جانتے ہیں کہ ان چیلنجوں کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے جب مجھے ایک ایپی سوڈ ملے گا۔انہوں نے مزید کہاکہ انسان کو اپنے ارد گرد موجود چیالنجز سے  نمنٹے کےلئے خود میں مثبت سوچ پیدا کرنا چاہئے تاکہ مشکلات کے سامنے ہم کمزور نہ پڑ سکیں ۔