Thursday, May 30, 2024
Homesliderمہنگائی پر 6 سالہ پہلی جماعت کی بچی کا مودی کو کھلا...

مہنگائی پر 6 سالہ پہلی جماعت کی بچی کا مودی کو کھلا خط

- Advertisement -
- Advertisement -

نئی دہلی ۔ بی جے پی حکومت میں آئے دن مہنگائی کے بڑھتے مار کی وجہ سے غریب ویسے ہی پریشان ہے لیکن اگر مہنگائی سے پریشان پہلی جماعت کی ایک 6 سالہ بچی  کا وزیر اعظم کے نام کھلا مکتوب لکھنا  کافی تشویش کا با ت ہے ۔ تفصیلات کے بموجب پہلی جماعت  میں پڑھنے والی چھ سالہ بچی نے وزیر اعظم نریندر مودی کو ایک خط لکھا ہے کہ وہ مہنگائی کی وجہ سے ہونے والی مشکلات کا سامنا کر رہی ہے۔ اتر پردیش کے قنوج ضلع کے چھبراماؤ قصبے کی کریتی دوبے نامی لڑکی نے اپنے خط میں لکھا میرا نام کریتی دوبے ہے۔ میں کلاس 1 میں پڑھتی ہوں۔ مودی جی، آپ نے قیمتوں میں بے پناہ اضافہ کیا ہے۔ یہاں تک کہ میری پنسل اور ربر (ایزر) بھی مہنگے ہو گئے ہیں اور میگی کی قیمت بھی بڑھا دی گئی ہے۔ اب میری ماں پنسل مانگنے پر مجھے مارتی ہے۔ میں کیا کروں؟ دوسرے بچے میری پنسل چوری کرتے ہیں۔

ہندی میں لکھا گیا خط سوشل میڈیا پر وائرل ہو گیا ہے۔اس کے والد وشال دوبے جو ایک وکیل ہیں انہوں نے اس خط پر کہا  کہ یہ میری بیٹی کی من کی بات ہے۔ وہ حال ہی میں اس وقت ناراض ہوگئی جب اس کی ماں نے اسے اسکول میں پنسل کھونے پر ڈانٹا۔ چھبراماؤ کے ایس ڈی ایم اشوک کمار نے صحافیوں کو بتایا کہ انہیں اس چھوٹی بچی کے خط کے بارے میں سوشل میڈیا پلیٹ فارم کے ذریعے معلوم ہوا۔ انہوں نے کہا کہ میں بچے کی ہر طرح سے مدد کرنے کے لیے تیار ہوں اور اس بات کو یقینی بنانے کی پوری کوشش کروں گا کہ اس کا خط متعلقہ حکام تک پہنچ جائے۔اس خط نے سوشل میڈیا پر دھوم مچادی  ہے اور لوگوں نے مہنگائی پر حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنانا شروع کیاہے او رکہا ہےکہ کس طرح ہندوستان کا ایک عام شہری مہنگائی کی مار سے پریشان ہے ۔